Saturday, August 18, 2012

A Patriotic Pakistani tribesman's message to Hamid Mir, Geo TV (and whole Pakistani media)

Opinion of a concerned Pakistani tribesman who wants to give a special message to Hamid Mir and Geo TV (basically whole Pakistani media). Reproduced without any alterations here.


جنا ب حا مد میر اینڈ ایم ڈی جیو ٹی وی۔

میرا تعلق فا ٹا سے ہے۔ میرا سوا ل یہ ہے کہ آپ سمیت سا رے ٹی وی چینلز NGOs کے منشور کو Promote کر نے میں لگے ہو ۔ آپ کے جیو اصول کے پر و گرام میں کو مذہبی عا لم ہے نہ فا ٹا سے کو ئی نما ئندہ ، کیوں ؟
ٓ آپ کے ٹی وی نے کبھی یہ پہلو اجا گر کیا ہے کہ فا ٹا اگر پا کستان کا حصہ ہے تو پھر پو رے فا ٹا میں
نہ یو نیو ر سٹی ہے، نہ عدا لت ہے ، نہ پو لیس ہے ، نہ سیا سی جما عت ہے ، نہ بینک ہے ، نہ اوپن ما رکیٹ ہے ،
نہ ہما ری زمینی و فضا ئی حدودکا احترا م ، نہ ہما رے جا نو ں کا حسا ب ہے حا لا نکہ دنیا میں آج کل گیدڑ اور بھڑیا بھی شما ر پر مروائے جا تے ہیں، نہ میڈیا ہے ، جبکہ عرا ق ، افغا نستان، ویتنام الغر ض ہر شو رش زدہ علا قوں میں دورا ن جنگ بھی میڈیا اپنے فرا ئض سر انجا م دیتے ہیں۔ آ پ سے کیا گلہ کہ آپ تو اپنے ولی خا ن با بر کے قا تل معلوم نہیں کر سکے ڈرون کو کیا پتا لگا لو گے۔
بلو چستا ن کے حا لا ت کو گمبیر ترین قرا ر دے رہے ہو حا لا نکہ وہا ں کچھ بھی نہیں ہے سب عا لمی طا قتوں کی ریکوڈیک و چا غی پر ڈا کہ ڈا لنے کے لئے ڈراما بنا یا ہو ا ہے۔ ہمیں ما را جا ر ہا ہے ہماری نسل کو شی ہو رہی ہے ۔ حا مد میر آپ کوسب سے زیا دہ اچھی طرح پتہ ہے کہ کیا فا ٹا کے سا رے لو گ جو کئی ملین ہیں دہشتگرد ہیں ؟ کبھی ہمیں سمگلر ، کبھی ڈا کو ، تو کبھی وحشی کہا جا رہا ہے۔ اور آپ کو یہ بھی پتہ ہے کہ دہشتگردی کے نا م پر نا م نہا د جنگ کس چیز کا جنگ ہے۔ آپ بخو بی جا نتے ہیں کہ اس جنگ کا بنیا دی نعرہ یہ تھا کہ اسامہ ایک بہا نہ ہے افغا نستان ایک ٹھکا نہ ہے اور کہو ٹہ اصل نشا نہ ہے۔
حا مد میر ! جالوت و طالوت سے شروع ہو کر، سکندر اعظم، ہلا کو اور چنگیزبھی ان وا دیوں میں لڑے، رنجیت سنگھ آیا، منگول و مر ہٹ دوڑے، انگلیسی فرہنگیوں نے بھی پنجہ ازمائی کی۔ روسیۂ کے لال چیتھے ہاں چہت ہو گئے۔ اب کی بار ریڈ انڈینز بھڑیئے میدان ہما رے گرم لہو سے گرم کئے ہو ئے ہیں۔ مگر یہ قدرے مکار اور بہت بزدل ہیں کیو نکہ خو د نہیں ہم سے مشین لڑا رہے ہیں۔
سوچھئے ! کیا ہم محض شکارہیں جو ہمیشہ شکار ہو تے رہنگے۔ کبھی تیرے جنگل تیرے بے قا بو، تو کبھی تیرے گرم پا نی کے سا حل میرے لئے وبال۔ آج پھر تیرے جو ہری شا ہین مجھ پر دن رات ڈرون کا سایۂ کیا ہو ا ہے۔ سوال یہ ہے کہ کیا آپ کا ایک چھوٹا حتف میرے نسل کے قا تل ڈرون کو گرا نے کیلئے فضا ء میں کیوں نہیں اڑ سکتا۔
ہم پا کستان کے پیدا ئش سے محب وطن تھے ہیں اور رہینگے۔ 1948 میں سری نگر ائیر پورٹ پر یہی قبا ئیل نا چ رہے تھے۔ روسیوں کو گودار جانے کا را ستہ ہم نے روکا۔ اور آج ڈا کٹر قدیر کی اسلامی بم پر ہم جا نیں نچا ور کر رہے ہیں اور کرتے رہنگے۔
اگر آپ وا قعی آزاد صحا فی ہو تو میری یہ میل نشر کر لو۔
.
ریا ض احمد بیٹنی فرا م جنڈولہ سا ؤتھ و زیر ستا ن

....................


Disclaimer: This blog is not an official PTI webpage and is run by a group of volunteers having no official position in PTI. All posts are personal opinions of the bloggers and should, in no way, be taken as official PTI word.
With Regards,
"Pakistan Tehreek-e-Insaf FATA Volunteers" Team.


No comments:

Post a Comment