Friday, February 1, 2013

Khadim-e-Aala or Khayen-e-Aala? CM Punjab Shahbaz Sharif using govt websites to promote personal Facebook and Twitter accounts

خا دم اعلیٰ یا خائن اعلیٰ؟۔۔۔۔ فیصلہ آپ کا
۔
Shahbaz Sharif, the Chief Minister of Punjab and also known as Khadim-e-Alaa, uses over two dozen government websites to promote his personal Facebook page and Twitter profile.

These websites – that are owned by government of Punjab and not by Mr. Sharif – are vigorously and shamelessly used by the chief minister to promote a Facebook page and a Twitter profile that he uses for official, personal and political motives.
It maybe recalled that the Facebook page and Twitter Profile in question are personal properties of Mr. Shahbaz, that he will retain even after completing his service term.
Instead of encouraging all these provincial government departments to have their own social media profiles, so that users may follow their updates and they may retain accounts even after the government is over, Mr. Sharif opted to promote his own profiles as if these government websites are his personal perperties.

These government websites range from Punjab Police to Punjab Pension Funds, Daanish Schools to Health Department. Almost every such website has a link to Shahbaz Sharif’s Facebook page and Twitter Profile, encouraging users to become his follower on social networking websites.
When we last checked Shahbaz Sharif had 343,349 fans on Facebook and close to 75,000 followers on Twitter.
It merits mentioning here that there might be more Government Websites used for the same purpose but we could find only 20 such websites – screen of which are attached below:


.

وزیراعلیٰ پنجاب المعروف خادمِ اعلیٰ شہباز شریف اپنے ذاتی فیس بک پیج اور ٹوئٹر پروفائل کی تشہیر کے لیے دو درجن سے زائد حکومتی ویب سائٹس کو استعمال کر رہے ہیں۔
ان ویب سائٹس ، جو حکومت پنجاب کی ملکیت ہیں، شریف صاحب کی نہیں ، کو بے رحمانہ و بے شرمانہ انداز میں اپنے باضابطہ، ذاتی و سیاسی مقاصد کے لیے استعمال کی جانے والی فیس بک پیج اور ٹوئٹر پروفائل کی تشہیر کے لیے استعمال کیا گیا۔
یاد رہے کہ فیس بک پیج اور ٹوئٹر پروفائل شہباز شریف کی ذاتی ملکیت ہیں، جسے وہ اپنی مدت مکمل ہونے کے بعد بھی استعمال کر سکتے ہیں۔
بجائے اس کے کہ صوبائی حکومت کے تمام شعبوں کو اپنے سوشل میڈیا پروفائلز بنانے کو کہا جائے، تاکہ وہ عوام ان کی تازہ ترین خبروں سے آگاہی حاصل کر سکیں اور ان کی حکومت کے خاتمے کے بعد بھی وہ اکاؤنٹس برقرار رہیں، شریف صاحب نے اپنے ذاتی پروفائلز کی تشہیر کا انتخاب کیا، جیسے یہ حکومتی ویب سائٹس ان کی ذاتی ملکیت ہیں۔
ان حکومتی ویب سائٹس میں پنجاب پولیس سے لے کر پنجاب پنشن فنڈز، دانش اسکولز سے لے کر محکمہ صحت تک سب شامل ہیں۔ تقریباً ہر ویب سائٹ شہباز شریف کے فیس بک پیج اور ٹوئٹر پروفائل کا لنک رکھتی ہے، اور ان سوشل نیٹ ورکنگ ویب سائٹ پر ان کا فالوور بننے پر صارفین کی حوصلہ افزائی کر رہی ہیں۔
جب ہم نے آخری مرتبہ چیک کیا تھا تو فیس بک پر شہباز شریف کے فینز کی تعداد 3 لاکھ 43 ہزار 349 تھی جبکہ ٹوئٹر پر فالوورز 75 ہزار کے قریب تھے۔
یہ امر قابل ذکر ہے کہ ممکن ہے کہ مزید حکومتی ویب سائٹس کو اس مقصد کے لیے استعمال کیا گیا ہو لیکن ہمیں صرف 20 ایسی ویب سائٹس ملیں – جن کے اسکرین شاٹس منسلک ہیں:
.
....................

Disclaimer: This blog is not an official PTI webpage and is run by a group of volunteers having no official position in PTI. All posts are personal opinions of the bloggers and should, in no way, be taken as official PTI word.
With Regards,
"Pakistan Tehreek-e-Insaf FATA Volunteers" Team.


No comments:

Post a Comment